جمعرات, جولائی 23, 2009

اٹلی میں غیر ملکیوں کو قانونی حیثیت، کچھ مذید

جیسا کہ کہا جاتا ہے "خاندانوں کی معاونت اور بحالی و بہبود کا ڈیکلیرشن" کولف (گھریلو معاون) بادانتے (معذور فرد کی دیکھ بھال کرنے والا) کو قانونی طور پر وہ مالکان جو اطالوی شہریت کے حامل ہیں یا پھر اطالیہ میں مقیم غیرملکی جو کارتا دی سوجورنو کے حامل ہیں، ملازم رکھتے ہوئے انکی قانونی طور پر پیرمسودی سوجورنو کی درخواست جمع کرواسکیں گے۔ یہ درخواست بعوض مبلغ پانچ صد یورو سکہ رائج الوقت کے داخل دفتر کروائی جا سکے گی، جسکےلئے مقررہ مدت 1 سے 30 ستمبر ہوگی۔ اطالوی اور یورپی شہری ایک فارم INPS میں جمع کروانے کو بھریں گے، جبکہ غیریورپی مالکان کی درخواستیں بعذریہ انٹرنیٹ کو جائیں گی۔ SPORTELLO UNICO PER L'IMMIGRAZIONE
ہر فیملی جسکی سالانہ آمدن بیس ہزار یا اس سے زیادہ ہے ایک کولف کو قانونی طور پر ملازم رکھ سکے گی جبکہ خاندان کے افراد ایک سے زیادہ ہونے کی صورت میں حد 25000 ہوگی جبکہ بادانتے کےلئے دو بھی رکھے جاسکیں گے مگر اس کےلئے خاندانی ڈاکٹر کو ایک بیان حلفی جمع کروانی ہوگی اور اسکےلئے آمدن کی کوئی حد مقرر نہیں ہوگی۔
بادانتے کےلئے درخواست بابا خود یا پھر اسکے رشتہ دار کے ذریعے جمع ہوگی جو اسکے ساتھ نہ بھی رہتا ہو، اس صورت میں مثال کے طور پر بابے کا بیٹا جو کسی دوسری جگہ رہائش پزیر ہے جمع کرواسکے گا

مکمل تحریر  »

جمعہ, جولائی 17, 2009

قانونی حیثیت کا حصول، طریقہ کار

ما بعد اعلانات اور تبدیلیوں کے، گزشتہ روز حکومت نے اسمبلی میں گھریلو ملازمیں کو قانونی حیثیت دینے کے بارے قانون کا مسودہ پیش کردیا ہے، بعذریہ حلف نامہ خاندانوں کی معاونت و مرفحالی کےلئے کی گئی کاروائی کے۔
اٹالین، یورپی نیشنل، یا وہ غیریورپی جوکارتادی سوجورنو کے حامل ہیں، ان گھریلو ملازمین کو باقاعدہ طور پر کام دے سکیں گے جو 30 جون سے انکے پاس غیرقانونی طور پر ملازم ہیں۔ اس کے ثبوت کے طور پر مالک کو ایک بیان حلفی جمع کروانی پڑے گی جس کے عوض بطور جرمانہ اسے مبلغ 500 یورو فی ملازم خزانہ میں جمع کروانا پڑے گا اور اسکے علاوہ اسکے خلاف کوئی مذید قانونی کاروائی عمل میں نہیں لائی جا سکے گی۔
ہر خاندان زیادہ سے زیادہ ایک فرد کو بطور گھریلو ملازم اور 2 افراد کو معذوروں اور عمررسیدہ افراد کی دیکھ بھال کی مدد میں رکھ سکے گا۔ اس کےلئے انکو کم سے کم 20 ہزار یورو کی سالانہ آمدن ظاہر کرنا ہوگی، اگر خاندان میں صرف ایک بندہ کمائی کرنے والا ہے اور اگر ایک سے زیادہ کمانے والے ہوں اور کم سے کم آمدنی کی مد میں 25 ہزار یورو ہیں۔
معذور و عمر رسیدہ افراد کی دیکھ بھال کےلئے ملازم رکھنے کےلئے کم سے کم آمدن کی حد کا اطلاق نہیں ہوگا، لیکن اس صورت میں ذاتی معالج یا محکمہ صحت asl کی طرف سے خاندان میں معذور فرد کی موجودگی کے بارے میں ایک سرٹیفیکیٹ کی ضروت ہوگی۔ مگر یہ خاندانی معالج ہی ہوگا جو دو افراد کی معاونت کی ضرورت ہونے کے بارے سرٹیفیکیٹ جاری کرے گا۔
جس نے گزشتہ فلوسی 2007 اور 2008 کے تحت ملازم کےلئے درخواست جمع کروائی تھی وہ اس کی قانونی حیثت کےلئے درخواست دے سکے گا مگر اس صورت میں خود بخود فلوسی کے ذریعے جمع کروائی گئی درخواست کو خارج کردیا جائے گا۔
ملازمین و مالکان کو اٹلی سے اسوقت تک نہ ہی نکالا جاسکے گا اور نہ ہی انکے خلاف کوئی امیگریشن قوانین کی خلاف ورزی کی مد میں فوجداری مقدمہ قائم ہوسکے گا جب تک انکی درخواستیں زیر غور ہوں گی اور قانونی حیثیت کے حصول کی صورت میں انکے خلاف بلکل کسی قسم کی کاروائی نہ کی جا سکے گی۔
ایک دفعہ درخواست کے معائنہ کے بعد اسکے قابل قبول ہونے کی صورت میں مالک اور ملازم دونوں کو امیگریشن آفس میں کونٹریکٹ پر دستخطوں کے بلایا جائےگا۔ اس موقع پر، ملازم اپنے اخراجات پر پرمیسو دی سوجورنو کے حصول کےلئے درخواست دے سکے گا، جس کے اخراجات آج تک مبلغ 70 یورو ہیں اور سیکورٹی کے قانونی کے لاگو ہونے کےبعد ان میں اضافہ ہوجائےگا۔
وہ شخص جس کو ماضی میں کاغذات کی عدم موجودگی یا اسکی پرمیسو دی سوجورنو کے ختم ہوجانے کی وجہ سے اٹلی سے نکالا گیا یا نکلنے کا حکم دیا گیا بھی اپنی قانونی حیثیت کے لئے درخواست دے سکے گا۔ البتہ جس کو سیکیورٹی، دہشت گردی اور مجرمانہ کاوائیوں کی مد میں، یا کسی ایک جرم کی مد میں جسے کے لئے باقاعدہ گرفتاری عمل میں لائی جاسکے، نکالا گیا یا نکلنے کا حکم دیا جا چکا ہے کے بارے کچھ نہ ہو سکے گا۔
احتیاج، زیادہ ہوشیار بننا مناسب نہ ہوگا کہ اگر آپ غلط بیان حلفیاں جمع کروائیں گے تو یہ ایک جرم ہوگا اور جعلی کاغذات کا پیش کرنے کی سزا چھ سال تک قید ہوسکتی ہے

مکمل تحریر  »

جمعرات, جولائی 16, 2009

عورتیں مردوں کے برابر

آج کے اخبار لیگو کے مطابق، یہاں پر خواتین کی پینشن کی عمر کو ترتیب وار بڑھا کر مردوں کے برابر 65 برس کردیا جائےگا، اسوقت سرکاری ملازم خواتین کو 60 برس کے بعد جبکہ مردوں کو 65 برس کے بعد پینشن پر جانے کا حق ہے،
گزشتہ کئی برسوں سے عورتیں ہر شعبہ زندگی میں مردوں کی برابری کےلئے کوششاں ہیں، چند ماہ پہلے روم میں پارلیمنٹ کے سامنے ہزاروں کی تعداد میں عورتوں اور انکو بےوقوف بنانے والے مردوں نے احتجاجی جلوس کا اہتمام کیا تھا۔ نعرہ تھا کہ ہمیں مردوں کے برابر کرو۔ حکومت نے کہا کہ لوجی ہوجاؤ مردوں کے برابر اور انہی کی عمر میں پینشن کو جاؤ، پس2010 میں پیشن کی عمر 61 برس اور بلترتیب 2018 میں 65 برس ہوجائے گی۔
اور برابری کرو۔۔۔۔

مکمل تحریر  »

جمعہ, جولائی 10, 2009

اٹلی میں غیر ملکیوں کو قانونی حیثیت دی جائے گی۔

آج کی خبروں کے مطابق اٹلی کے وزیر داخلہ اور فلاحی امور کے وزیرا کے درمیان اٹلی کے اندر موجود بغیر کاغزات کے غیر ملکیوں کو قانونی حیثیت دی جائے گی، اس قانون کا اطلاق ستمبر سے ہوگا البتہ ابھی تک اسکی تکنیکی تفصیلات کا طے ہونا باقی ہے، اس قانون کے مطابق اٹلی کے اندر موجود بغیر کا غزات کے لوگ چاہے انکا تعلق کسی بھی ملک سے ہو گھر میں کام کا کرنے کا معاہدہ جمع کروا کر رہائشی پرمٹ حاصل کرسکیں گے، یہ معاہدہ اطالوی نیشنل یا پھر زیادہ عرصہ سے یہاں پر رہنے والے لوگ جو کارتا دی سوجورنو کے حامل ہیں ہی جاری کرسکیں گے۔
یاد رہے کہ چند ہی دن پہلے یہا ایک نیا قانون تحفظ کے نام سے پاس ہوا ہے جس کے مطابق اٹلی میں غیر قانونی رہنا ایک جرم قرار دیا گیا ہے جس کی سزا مقرر کی گئی ہے اور غیرقانونی رہنے والوں کی مدد کرنے والے بھی پہلے جرمانہ کیا جائے گا، اس کی مخالفت تمام انسانی حقوق کی تنظیموں اور ویٹیکن نے اسے وحشیانہ اور انسانی حقوق کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے کی تھی۔

مکمل تحریر  »

جملہ حقوق بنام ڈاکٹر افتخار راجہ. تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.

اس بلاگ میں تلاش