جمعرات, دسمبر 31, 2009

نیا سال مبارک

میری طرف سے جملہ قارئین، اہل وطن، اہل اسلام اور اہل عالم کو نیا آنے والا سال مبارک ہو اس دعا کے ساتھ کہ یہ سال ہم سب کےلئے رحمتوں برکتوں اور کامیابیوں کا سال ہو۔ آمین

مکمل تحریر  »

جمعہ, دسمبر 18, 2009

پاگل موسم

لگتا ہے کہ اس دفعہ موسم پاگل ہوگیا ہے، کہ صبح عام سردیوں کی سی ٹھٹھرتی ہوئی، منفی دو کے قریب درجہ حرارت بقول گاڑی کے ڈیش بورڈ کے، دس بجے زور کی برفباری کوئی آدھے گھنٹہ کےلئے لگاتار برفباری گویا روئی کے گالے اڑ رہے ہوں، پھر بارہ بجے کے قریب واہ واہ دھوپ ، یورپ کے دیگر ممالک کی طرح یہاں بھی سردیوں کی دھوپ بھی خنک ہی ہوتی ہے۔ مگر ابھی نکلنے لگا تو کیا دیکھتے ہیں کہ جناب پھر سے برفباری شروع ہے۔ بقول موسمی پیشن گویاں کرنے والی ویب کے یہ آنکھ مچولی چلتی رہےگی۔ البتہ سردی کافی ہے ان دنوں میں رات منفی چار تک بھی چلی جاتی ہے۔

مکمل تحریر  »

جمعرات, دسمبر 17, 2009

ہمارا گاؤں

جہلم شہر سے تیرہ کلومیٹر شمال کو ہمارا گاؤں گٹیالی دریائے جہلم کے کنارے واقع ہے حد یہ کہ نوجوانی کے زمانہ میں صبح شام دریا کے پانی میں ڈبکی لگائے بغیر نہ دن شروع ہوتا اور نہ ہی ختم، ہمارے گردونواح کا حصہ بمعہ بیلہ جو تقریباُ بیس برس پہلے تک جب ہمارے دادا جی زندہ تھے کاشت بھی ہوتا تھا مونگ پھلی، تربوز اور تمباکو کی پیداوار کے گردو نواح میں مشہور، بعد میں تعلیم نے کاشکاری کو زوال پزیر کیا اور سب نے ہاتھ کے بجائے دماغ سے کمائی کرنے کی کوششیں شروع کردیں، آج آپ کو سارے فوج کی سروس میں، ڈاکٹرز، وکلاء، انجنئیر اور بیرون ملک ڈش واشر وغیر ملیں گے، بیلہ کے علاقہ میں کاشتکاری ختم ہوچکی البتہ آزاد کےعلاقہ میں اکا دکا کاشتکاروں اور مویشی پالنے والوں کے ڈیرے مل جائیں گے۔ جہاں ہماری حد ختم ہوتی ہے وہاں سے آزاد کشمیر کی سرحد شروع ہوجاتی ہے۔ محکمہ مال کے نقشہ دیہہ جسے عرف عام میں لٹھہ کہا جاتا ہے کہ سوت کے ایک کپڑا پر کسی ماہر پٹواری نے ہاتھ بنایا تھا اور اتنا پیچدہ ہے کہ ہر مقدمہ میں اسکی تشریح اتنی مختلف ہوتی ہے کہ مقدمہ ختم تک نہیں ہوپایا۔ اس کے مطابق جو آخری بار انیصد چالیس میں مرتب ہوا۔ آزاد کشمیر اور ہمارے دیہہ کی سرحد تقریباُ 3 کلومیٹر ایک ساتھ میں چلتی ہے، اس علاقہ میں مچھلی اور سؤروں کا شکار بکثرت ہوتا ہے اور سردیوں میں مرغابی اور تلیر بھی پھڑکائے جا سکتے ہیں نشانہ اچھا ہونا شرط ہے، اور غیر قانونی طور پر کتوں اور مرغوں کی لڑائیاں بھی بیلہ میں ہوتی ہیں۔ آپ اسے جہلم کا علاقہ غیر ہی سمجھیں کہ اکثر اوقات مفروروں وغیرہ کی موجودگی کی بھی افواہیں اٹھتی رہتی ہیں اور پولیس کی طرف سے چھاپوں کی بھی اطلاع ملتی ہے اور پھر تماشایوں کی بھاگھم بھاگ کی بھی جسے لیاقت بھائی پھڑلو پھڑلو کا نام دیتے ہیں

مکمل تحریر  »

سوموار, دسمبر 07, 2009

ہم چاروں سوار

مکمل تحریر  »

جملہ حقوق بنام ڈاکٹر افتخار راجہ. تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.

اس بلاگ میں تلاش