جمعہ, جولائی 29, 2011

پیاٹیٹس اور معالجات

شکوہ اپنے ہم پیشہ دوستوں سے ہے، تب سے جب سے پڑھانا شروع کیا تھا، کہ منظم تحقیق نہیں ہے ہیپاٹایٹس کی معالجات کے شعبہ میں۔ ہمارے ایلوپیھیک اور سرجن لوگ صرف یورپ و مغرب کی تحقیقات پر جی رہے ہیں، ہمارے حکیم، ہومیوپیتھ اور وید لوگ صرف کتاب کی حد تک ہیں یا تک بندی پر اتر آئے ہیں، ڈاکومنٹیشن کی طرف نہیں آتے، تحقیق اور نظم کی کمی، ایک انگریز کے نسخہ جات کو بڑھیا قرار دیے جاتا ہے اور حتمی علاج کے طور پر تسلیم کروانے کو مصر، دوسرے کاسنی، دارچینی، اجوائین خراسانی، ملٹھی کا جگر پر اثرات کو ثابت کرنے کے لئے ایڑی چوٹی کا ذور لگا رہے ہیں مگر صرف اور صرف ذاتی نسخہ جات اور تجربہ کی بنیاد پر، پاکستان ایک ایسا ملک ہے جو بہر تین تہذیبوں کا گوارہ ہے، مغربی تحقیق، اسلامی تناظر اور ہندی پس منظر کے ساتھ تینوں شعبوں میں کمالات کو عوام الناس کی فلاح کےلئے استعمال کیا جاسکتا ہے یورپی میڈیسن میں ہمارے لوگ ماہر ہیں، ہومیوپیتھی کا علم ان کے پاس ہے، حکمت و طب کے عالم ادھر ہیں، طب اسلامی و ایورویدک میں ہونے والی ساری تحقیق انکے پاس ہے، دنیا کے کتنے ممالک ہیں جو اس شعبہ میں پاکستان کا مقابلہ کرسکتے ہیں، انڈیا کے پاس اسلامی طب کی علم کم ہے، اہل غرب کے پاس انڈین میڈیسن نہیں، عربوں کا بھی یہی حال ہے کہ انکا گزارہ مغربی میڈیسن اور عربی طب پر ہے، ہونا تو یہ چاہئے تھا کہ یہ سارے لو سر جوڑ کر بیٹھ جاتے اور ہر طریقہ علاج کے ذریعے عوام کو فائدہ پہنچتا، مگر پھر وہی ڈھاک کے تین پات، بلی کے گلے میں گھنٹی باندھے تو کون؟؟؟

مکمل تحریر  »

جمعرات, جولائی 21, 2011

قومی مفاد

بہت شور سنتے تھے پہلے میں دل کا، جو چیرا تو اندر سے گیس نکلی جیسے ایم کیو ایم حکومت سے بہت شور کرتے ہوئے نکلی اور آذاد کشمیر میں پھر پی پی کے ساتھ بیٹھے گی، پنجابی میں کہتے ہیں کہ تیری زبان ہے یا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ (خالی جگہ دل میں پر کرو ) ہمارے میاں صاحب کا خیال ہے کہ اس سے ثابت ہوتا ہے کہ پاکستان میں سیاہ ست دان جو ہیں وہ یہی ہیں اور یہ کہ یہ لوگ وسیع تر قومی مفاد میں ملک بھی بییچ کھائییں گے،
ہمارے دادا جان ہمیں بہت دعائیں دیا کرتے تھے، ہم میں سے کوئی کہہ دیتا کہ اجی جی آپ اپنےلئے کبھی کچھ نہیں مانگتے دعا میں تو وہ کہتے کہ پتر تم جو میرے ہو سو تمھارے لئے مانگا تو اپنے لئے مانگا۔ پھر وہ لطیفہ دھرایا جاتا کہ ایک مولوی صاحب جمعہ کی نماز کے بعد دعا کروا رہے تھے، یااللہ کل عالم کو صحت دے، تندرستی دے، امن دے، یااللہ کل عالم کے اعلٰی تعلیم عطافرما، اسکو اچھی سی نوکری دلوادے، اسکی شادی کروادے، یا اللہ میرے مالک کل عالم کو بیٹا عطا فرما، یااللہ کل عالم کو ایک اور یبٹا عطافرما یااللہ کل عالم کو ایک اور یبٹا عطافرما ، یا اللہ کل عالم کو ایک اور یبٹا عطافرما۔۔۔
دعا ختم ہوئ تو کسی نے پوچھا مولوی صاحب آپ نے سب کچھ کل عالم کےلئے مانگ لیا ہے آپ لئے کچھ نہ مانگا، تو مولوی صاحب نے جواب دیا کہ اپنے لئے ہی تومانگا ہے، وہ بندہ حیران ہوکر پوچھتا ہے کہ جناب وہ کیسے مولوی صاحب کہنے لگے کیونکہ کل عالم میرے بیٹے کا نام ہے۔
ہمارے سیاہ ست دان بھی میرے خیال سے وسیع تر قومی مفاد سے مراد اپنا ذاتی نفع و مفاد لیتے ہیں
حل۔۔۔ امیر تیمور جو تاریخ میں زمین کو ہلادینے والا کا لقب رکھتا ہے اس مرد بزرگ کی سوانح عمری میں ہیرالڈیم لکھتا ہے کہ جب بھی امیر تیمور کے پاس کوئی نقصان، کی شورش کی یا کسی وعدہ خلافی کی خبر پہنچتی تو وہ فوراُ کہتا، رستہ ایک ہی ہے،صرف ایک ہی ، ہمیشہ سے۔۔۔۔
پھر فوراُ فوجوں کو کوچ کا حکم مل جاتا

مکمل تحریر  »

بدھ, جولائی 20, 2011

باپ کی مرضی

لگتا ہے یہ امریکیوں کے باپ کا ملک ہے جو اپنی شناخت کروانے سے انکار کروارہے ہیں، ادھر امریکہ میں تو وزیروں کے بھی جوتے اتروالیے جاتے ہیں، کوئی چوں نہیں کرتا اور ادھر رحمان ملک سب کے فون کرکے لنگ جانے کا کہہ دیتا ہے، چکر کیا ہے آخر؟؟؟ کیا ہم لوگ اتنے ہی لیٹ گئے ہیں کہ جو کوئ مرضی ہم پر چڑھ دوڑے

مکمل تحریر  »

ہفتہ, جولائی 16, 2011

شب برات اور والدہ کی برسی

آج کی شب شب برات کے نام سے ہے، اللہ کی رحمتیں اور برکتیں سب پر، آج ہمارے محترمہ والدہ کی برسی بھی ہے انہوں نے 5 برس قبل 15 شعبان کو اس دارفانی سے کوچ کیا تھا جملہ آحباب سے درخواست ہے کہ آج کی شب بیداری عبادات اور دعائیں میں مرحومہ کے لئے مغفرت اور ہمارے لئے رحمت کی دعا کیجئے گا، اللہ آپ کو جزائے خیر دے

مکمل تحریر  »

جمعرات, جولائی 14, 2011

فرمائیش

بابا پیسے بھیجو بیٹا کتنے بھیجوں آپ نے کیا کرنے ہیں؟ ،ما ما سے لے لو؟؟ نہیں بابا آپ بھیجو یا پھر لے کے خود آجاؤ، بابا ٹوٹے ہوئے پیسے بھیجنا ، میں نے گڑیا لینی ہے اور ماما کہتی ہے کہ میرے پاس ٹوٹے ہوئے پیسے نہیں ہے۔ آپ بھیج دو گے ناں

مکمل تحریر  »

ہفتہ, جولائی 09, 2011

تقسیم پاکستان کے خواب

پاکیستانیوں جاگو اور آنکھیں کھولو، تمھارے دشمن تمھارا گلا ہی بس دبانے والے ہیں، یہ سارا چکر ہے، جناح کا اردو کے ساتھ کیا تعلق وہ تو انگریزی بولتے تھے، مگر اس سارے چکر میں جناح کا نام اور اردو کو استعمال کیا جارہا ہے، جناح کا خواب جناح پر نہیں تھا مگر پاکستان ہے، یہ سید جال الدین میرجعفر کا کوئی لگتا ہے اس کو چاہئے کہ اخلاقی طور پر جعفر پر کا نام استعمال کرے نہ کہ جناح کا۔ مگر وہ پنجابی میں کیا کہتے ہیں کہ بے شرماں کی تشریف پر آک اگا تو کہنے لگے یاراں نے تو چھاؤں ہی بیٹھنا ہےیہ سب پاکستان اور مسلمان دشمن قوتوں کے کارندے ہیں جنکا ایک ہی مقصد ہے کہ پاکستان کو توڑنا، چاہے ہو مزہب کے نام پر ہو یا لسانی وجہ سے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بس پاکسان نہیں تو دہشت گردی نہیں ، میں پوچھتا ہوں کہ کتنے پنجابیوں نے سندھیوں کو مار ہے اور کتنے سندیوں نے بلوچیوں کو اور کتے بلوچیوں نے پشتوں کو، کیا ہر صوبے میں باہر کے لوگ نہیں بسے، ادھر یورپ کچھ بھی مشترک نہ ہونے کے باوجود ایک ہورہا ہے اور ہمیں تقسیم کررہے ہیں، آج ہی سوڈان کو تقسیم کردیا گیا دو حصوں میں، جو مصر کے ہمسایہ میں بڑا افریقی مسلمان ملک تھا۔ اگر یہ سید واقعی مسلمان ہے تو اللہ کی کونسی رسی کو مضبوطی سے پکڑرہا ہے؟؟؟؟؟

مکمل تحریر  »

جمعہ, جولائی 08, 2011

ادھر تم ادھر ہم

ویسے بزرگوں ہمارے ملک میں باقاعدہ طور پر جنگی قانون نافذ کرنے میں اب اور چیز رکاوٹ ہے؟؟؟؟ کیا یہ انتظار کر رہے ہیں کہ مشرقی پاکستان کی طرح ایک بار پھر کچھ ٹکڑے ہوں مگر اب کے پی پی کی وجہ سے اگر وہی ادھر تم ادھر ہم والا چکر چلا تو پھر ککھ نہ رہے گا باقی

مکمل تحریر  »

جمعرات, جولائی 07, 2011

بچہ جمہورا

آج کل ہرطرف ملکی مفادات کا دورہ پڑا ہوا ہے بقول شاہ جی کہیں یہ ملکی مفاد میں یہ ملک ہی نہ بیچ دیں کہ بھائی لوگو کرلو گل، ہم نے ملکی مفاد میں ملک بیچ دیا ہے، ویسے شاہ جی خیال اتنا غلط بھی نہیں ہےکہ مشرف ملکی مفاد مین امریکہ کو ۔۔۔۔۔۔۔ وہ بھی دے گیا ہے، اپنی نہیں قوم کی، کہ بھئی اب مار لو تم بھی۔
نواز لیک اور متحدہ قومی مار ملکر ذرداری پارٹی سے بڑھ کر عوامی دھنائی کا پروگرام بیان کررہی ہیں، انکا کہنا ہے کہ ہم قومی مفاد میں ایک دوسرے کی حرامزدگیوں اور یینکی پھینکیوں کو بھلا کر عوام کو ذرداری سے نجات دلا کر اسے پر سواری کریں گے۔
میں خود چند برس پہلے بہت بڑا مسلم لیگی تھا کیون کہ ہمارے باپ دادا بھی تھے، مگر اس نواز شریف کے کے چالے دیکھ کر پریشان ہوگیا ہوں، اس مسلمان نے ملکی مفاد میں کیا کیا نہیں کیا، ذرداری کو تخت پر چڑھایا، اپنے بال لگوا لیے، تین بھائی کو پھر سے وزیر اعلٰی بنوادیا، ملکی مفاد میں اپنے اثاثے ملک سے باہر رکھے کہ کل کلاں اکر خاکم بدھن ملک نہ رہے تو اس کا مطلب یہ بھی تو نہیں کہ اس کے اثاثے بھی جاتے رہیں، یہ ہی سوچ کر غالباُ مہاجر حسین بھی پاسپورٹ لےگیا، ذرداری بھی دبئی میں مکان بنا گیا، اور باقی ہر ایم این اے اور ایم پی اے بیرون ملک حسب توفیق اپنی جائداد بناچکا ہے، میں یہاں یورپ کے دل میں بیٹھ کر بیسیوں نہیں تو دسیوں کے نام گنواسکتا ہوں۔

مکمل تحریر  »

منگل, جولائی 05, 2011

گوگل پلس پر زبان دانیاں

دو دن سے گوگل پلس میں دوسروں کی دیکھی گئی اور اپنی پوسٹی گئی تحریرون سے لگ رہا ہے کہ یہ گوگل پر صرف اور صرف اردو کے فروغ کےلئے بنی ہے، البتہ ایک اور چیز سامنے آئی ہے وہ پنجابی کا بے دریغ استعمال ہے ، جی بلکل آپ درست سمجھے بلکل ایسے ہی جیسے ہمارے وزیراعظم پیرومرشد یوسف رضاگیلانی انگریزی کو ملا کر بولتے ہیں۔
ہر بندہ اپنی بات کو ثابت کرنے اور دوسرے کو سمجھنے کےلئے دوسری ذبان کا سہارا لیتا ہے، کہیں اسکا مقصد لفڑا کرنا بھی ہوتا ہے ، بلکہ اسی طرح جس طرح ہماری کیمیسٹری کی کتاب میں کا کے کو کے علاوہ باقی ساری عبارت انگریزی میں ہوتی ہے اردو رسم الخط میں تحریر شدہ، یعنی کہ نیوٹن کے پہلے قانون حرکت میں ولاسٹی اور ری ایکشن کا ذکر ہے ۔ اب میں تو ولاسٹی ری ایکشن اور نیوٹن کے الفاظ پر ہی اڑا رہا اور عوام اڑ گئی۔۔۔۔
سوال۔
اس سارے قضئے میں جس کی غلطی ہے اسکی نشاندہی کی جائے غلطی کی نہیں بندے کی، اور پھر اس سے سوال کیا جائے کہ اگلی دفعہ اگر تم غلطی نہیں کرو گے تو کیا کرو گے؟؟؟

مکمل تحریر  »

جملہ حقوق بنام ڈاکٹر افتخار راجہ. تقویت یافتہ بذریعہ Blogger.

اس بلاگ میں تلاش